بھارتی ریپ گرو رام رحیم سنگھ کی منہ بولی بیٹی ’ہنی پریت ‘ جیل میں پہلی رات کو کیا کرتی رہیں؟ تہلکہ خیز انکشاف منظرعام پر

ڈیرہ سچاسودا کے سربراہ گرمیت رام رحیم سنگھ کی منہ بولی بیٹی ہنی پریت کو بھی تفتیش مکمل ہونے پرامبالاسنٹرل جیل منتقل کردیاگیا ہے جہاں اس نے پہلی رات بغیر سوئے گزار دی حتیٰ کہ کھانا تک نہیں کھایا، جمعہ کو پنکچولا کی ایک عدالت نے اسے جیل بھجوایاتھاجہاں پہلے ہی ہنی پریت کی ساتھی سکھدیپ کور قید ہے ۔
ٹائمزآف انڈیا کے ذرائع کے مطابق جیل میں پہلی رات ہنی پریت سونہیں سکی ، ہنی پریت اوراس کی ساتھی کو انتہائی سخت سیکیورٹی میں ویمن سیل میں رکھاگیااوران پر نظررکھنے کے لیے ایک خاتون کانسٹیبل کو تعینات کیاگیا۔ذرائع کاکہناہے کہ ہنی پریت اور سکھدیپ ایک دوسرے کے علاوہ کسی تیسرے سے کوئی بات نہیں کررہیں،دونوں کو جیل کے عملے نے صبح چھ بجے جگایا اور نہانے کے لیے بھیج دیا، ناشتے میں چائے اور بریڈ کے دو پیس دیئے گئے۔

ڈیرہ کے پیروکاروں کے اکٹھ کی وجہ سے پولیس انتہائی سخت سیکیورٹی میں ہنی پریت اور سکھدیپ کو پنچکولا سے امبالالائی تھی اور جیل میں آنے کے چند لمحے بعد ہی ہنی پریت نے حکام سے استدعا کی کہ اسے گرمیت سے ملنے دیاجائے کیونکہ وہ ایک عرصے سے ان سے ملاقات نہیں کرسکی۔
ذرائع کے مطابق میڈیکل چیک اپ کے دوران ہنی پریت نے خرابی صحت اور دل کی نبض تیز ہونے کی بھی شکایت کی ، امبالاسول ہسپتال کے تین ڈاکٹروں کے پینل نے دوگھنٹوں تک ہنی پریت کا چیک اپ کیا اوراس کی صحت درست قراردیدی۔پینل میں شامل ڈاکٹر ارپیتا گرگ نے بتایاکہ ’ وہ مکمل طورپر صحت مند ہے اور ممکن ہے کہ اس کی نبض ذہنی دباﺅ کی وجہ سے تیزہوگئی ہو“۔