گھر سے آتی چیخیں، خاتون بھاگ کر اندر داخل ہوئی تو 3 آدمی اس کی نوجوان بیٹی کا ریپ کررہے تھے، پھر اس خاتون نے کیا کیا؟ کوئی مَردکبھی خوابوں میں بھی نہیں سوچ سکتا کہ ایسا بھی ہوسکتا ہے

جنسی جرائم تو ہر جگہ ہوتے ہیں لیکن جنسی درندوں کو ایسے عبرتناک انجام کا کم ہی سامنا کرنا پڑتا ہے جیسا کہ جنوبی افریقہ میں ایک نوجوان لڑکی کی عزت پر ہاتھ ڈالنے والے تین اوباشوں کو کرنا پڑگیا۔
ویب سائٹ ورلڈ وائرڈ ویئرڈ نیوز کی رپورٹ کے مطابق جنوبی افریقہ کے شہر جوہانسبرگ میں تین بدقماش مردوں نے گھر میں گھس کر ایک 27 سالہ لڑکی کی عزت پامال کرنے کی کوشش کی تو لڑکی نے شور مچادیا۔ غنڈوں نے لڑکی کو دبوچ لیا لیکن اسی دوران لڑکی کی والدہ اپنی بیٹی کی چیخ و پکار سن کر پہنچ گئی۔ اس کے ہاتھ میں بندوق تھی اور اس نے اپنی بیٹی کی عزت پر حملہ آور ہونے والوں کو دیکھتے ہی گولیاں برسانا شروع کر دیں۔ اس کی فائرنگ کے نتیجے میں ایک بدبخت موقع پر ہی مارا گیا جبکہ دو زخمی حالت میں فرار ہوگئے۔

بدقسمتی سے پولیس نے خاتون کو قتل کے الزام میں گرفتار کرلیا ہے اور اس کے خلاف قانونی کارروائی کی جارہی ہے۔ نیشنل پراسیکیوٹنگ اتھارٹی آف ساﺅتھ افریقہ کے حکام کا کہنا ہے کہ فی الحال تو خاتون کے خلاف قتل کے الزام کے تحت قانونی کارروائی کی جارہی ہے لیکن دوران تفتیش سامنے آنے والے حقائق سے مقدمے کی نوعیت بدل سکتی ہے۔ زخمی ہونے والے دو نوجوانوں پر جنسی زیادتی کے الزام کے تحت مقدمہ قائم کیا گیا ہے۔
دوسری جانب بہادر خاتون کے علاقے کے لوگوں نے بڑے پیمانے پر اس کے ساتھ اظہار یکجہتی کیا ہے۔ اہل علاقہ نے اس کی ضمانت کیلئے رقم بھی جمع کی ہے اور اعلان کیا ہے کہ وہ اس کا مقدمہ مل کر لڑیں گے اور ہرگز اسے سزا نہیں ہونے دیں گے کیونکہ اس نے جو کچھ بھی کیا اپنی بیٹی کی عزت بچانے کیلئے کیا۔