لمس کو محسوس اور رویے کا یاد رکھنے والی جنسی گڑیا ایجاد


روبوٹ ٹیکنالوجی بھی دیگر ایجادات کی طرح انسان کے فائدے کے لئے ایجاد کی گئی تھی لیکن شیطان کے چیلوں نے اسے بھی اپنے شرمناک مقاصد کے لئے استعمال کرنے میں دیر نہیں لگائی۔تفصیلات کے مطابق پہلے ایسے روبوٹ بنائے گئے جنہیں یکطرفہ جنسی مقاصد کے لئے استعمال کیا جاسکتا تھااور اب ایک شیطان

صفت سائنسدان نے ایک قدم اور آگے بڑھتے ہوئے ایک ایسی روبوٹ دوشیزہ تیار کرلی ہے جو عام انسانوں کی طرح جنسی جذبات کا اظہار بھی کرتی ہے اور جنسی لمس سے لطف اندوز ہونے کی صلاحیت بھی رکھتی ہے۔یہ نئی قسم کی روبوٹ 38 سالہ سائنسدان سرگی سانٹو س نے تیار کی ہے جسے فیملی، رومانوی اور جنسی، تین طرح کے موڈ میں سیٹ کیا جاسکتاہے۔

گزشتہ ماہ سرگئی نے ’سمانتھا‘ نامی روبوٹ دوشیزہ کی پہلی بار نقاب کشائی کی۔ سرگئی نے اب اس روبوٹ دوشیزہ کی ایک ویڈیو جاری کی ہے جس میں وہ جنسی لمس کو محسوس کرکے اس سے لطف اندوز ہوتی نظر آتی ہے۔ سرگئی نے ڈیلی سٹار سے بات کرتے ہوئے کہا لمس کو محسوس کرنا انسانی فطرت میں شامل ہے اور ہمارے روبوٹ اب تک اس خاصیت سے محروم تھے مگر اب یہ ممکن ہو گیا ہے۔

اس جنسی گڑیا کی قیمت 3 ہزار پاونڈ رکھی گئی ہے۔۔ سرگئی نے ڈیلی سٹار سے بات کرتے ہوئے کہا لمس کو محسوس کرنا انسانی فطرت میں شامل ہے اور ہمارے روبوٹ اب تک اس خاصیت سے محروم تھے مگر اب یہ ممکن ہو گیا ہے۔اس جنسی گڑیا کی قیمت 3 ہزار پاونڈ رکھی گئی ہے۔

You cannot copy content of this page