”1983میں سنجے دت شراب کے نشے میں دھت ہو کر سری دیوی سے ملنے پہنچے تو بغیر اجازت سیدھے کمرے میں چلے گئے اور پھر ۔۔۔“ سنجے دت کی سری دیوی کے ساتھ فلموں میں کام نہ کرنے وجہ پہلی بار منظر عام پر آ گئی ،ایسا کیا ہوا تھا ؟جان کر آپ بھی دنگ رہ جائیں گے


گزشتہ 25 برسوں سے سنجے دت اور سری دیوی ایک ساتھ بڑے پردے پر نظر نہیں آئے تاہم اب اس کی وجہ سامنے آگئی ہے۔
تفصیلات کے مطابق
سری دیوی کا شمار فلم نگری کی صف اول کی اداکاراو¿ں میں ہوتا ہے جنہوں نے بالی ووڈ کو متعدد بلاک بسٹر فلمیں دیں، 80 کی دہائی میں اداکارہ کی شہرت کی وجہ سے ان سے پوچھ کر ہی ان کے مدمقابل ادکار کو کاسٹ کیا جاتا تھا اور ایسا ہی کچھ سنجے دت کے ساتھ بھی ہوا۔

 

بالی ووڈ میں سنجو بابا کے نام سے مشہور سنجے دت 80 کی دہائی سے اب تک ہر چھوٹی اور بڑی اداکارہ کے ساتھ کام کرچکے ہیں مگر سری دیوی کے ساتھ وہ صرف فلم ’گمراہ‘ میں ہی اداکاری کے جوہر دکھا سکے اور اس کی وجہ خود سنجو بابا نے ایک انٹریو میں کچھ اس طرح بتائی۔
بھارتی میڈیا رپورٹس کے مطابق ایک انٹریو میں سنجے دت کا کہنا تھا کہ 1983 میں جب سری دیوی ’ہمت والا‘ کی شوٹنگ میں مصروف تھیں تو میں نے اسی وقت اپنے کریئر کا آغاز کیا تھا اور میں سری دیوی کا بہت بڑا مداح تھا، مجھے جیسے ہی ان کی شوٹنگ کا پتہ چلا تو میں شراب کے نشے میں ہی ان سے ملنے سیٹ پر پہنچ گیا مگر جب وہ مجھے سیٹ پر نہیں دکھیں تو میں ان کے میک اپ روم میں گھس گیا، مجھے معلوم نہیں کہ میں نے ان سے کیا کہا البتہ وہ سری دیوی کو اچھا نہیں لگا اور انہوں نے غصے سے دروازہ بند کیا۔
رپورٹس کے مطابق سنجو بابا کی اس حرکت کے بعد سری دیوی بہت ڈر گئی تھیں، انہوں نے سنجے دت کے ساتھ دوبارہ کبھی کام نہ کرنے کا فیصلہ کیا اور کافی عرصے تک سنجے دت کے ساتھ تمام فلمیں سائن کرنے سے انکار کرتی رہیں تاہم 1993 میں سنجے دت کو فلم ’گمراہ‘ کے لیے کاسٹ کیا جاچکا تھا اور اس وقت سنجو بابا شہرت کی بلندیوں پر تھے جب کہ سری دیوی کی کامیابی کا گراف نیچے آرہا تھا یہی وجہ تھی کہ اداکارہ کی سنجے دت کو فلم سے نکالنے کی تمام کوششیں ناکام رہیں اور ان کے پاس فلم سائن کرنے کے سوا کوئی چارہ نہیں رہا۔

You cannot copy content of this page