اسلام کیخلاف نازیبا بکواس کرنے والا ملعون سلمان رشدی اپنی بیوی سے کیا شرمناک ترین فرمائش کرتا تھا؟ حقیقت سے پردہ اٹھ گیا، سابق اہلیہ نے تہلکہ خیز انکشاف کر کے پوری دنیا میں منہ کالا کر دیا


ہوس زدہ ملعون سلمان رشدی کی کئی بیویوں میں سے ایک بھارتی شہری پدما لکشمی نے اپنی کتاب ”لو، لاس اینڈ وٹ وی ایٹ“ (Love, Loss and What We Ate) میں اس ملعون کے شرمناک چہرے سے پردہ اٹھا دیا ہے۔

 
اپنی کتاب کے متعلق پیپل میگزین(People magazine) سے گفتگو کرتے ہوئے 45سالہ پدمالکشمی نے کہا کہ ”سلمان رشدی لگاتار جنسی تعلق چاہتا تھا یہ جاننے کے باوجود کہ میں ایک اندرونی مرض میں مبتلا ہوں جس کے باعث میں شدید تکلیف میں مبتلا ہو جاتی ہوں۔ وہ بے رحم تھا اور ہر وقت یہ شرمناک مطالبہ ہی کرتا رہتا تھا۔
لیکن جب میں انکار کرتی تو بے رحم رشدی پاگل ہو جاتا۔ ہمارے درمیان خوشگوار بحث زہریلی لڑائی میں بدل جاتی۔میں اس کی جنسی خواہش کی تکمیل نہ کر پاتی تو وہ مجھے فالتو چیز قرار دیتے ہوئے انتہائی گھٹیا زبان استعمال کرتا۔ وہ کہتا کہ تم سے شادی کرکے میں نے گھاٹے کا سودا کیا ہے۔ اس کے ان طعنوں کی وجہ سے میں نے طلاق لینے کا فیصلہ کیا اور بالآخر اس سے الگ ہو گئی۔ “
انہوں نے مزید لکھا کہ ”میری ملعون رشدی کے ساتھ عدم تحفظ محسوس کرتی تھی اور وہ ایک حاسد شخص ثابت ہوا تھا جو میری کامیابیوں سے حسد کرتا تھا۔ میں پہلے ہی 2 ٹی وی پروگراموں میں جا چکی تھی جس کے بعد میری تصویر نیوزویک کے فرنٹ پیج پر چھپی۔ اس پر رشدی نے میری انتہائی حوصلہ شکنی کی اور کہا ”نیوز ویک نے میری تصویر اس وقت شائع کی جب کوئی میرے سر میں گولی مارنے کی کوشش کر رہا تھا۔“

واضح رہے کہ پدما لکشمی اور سلمان رشدی پہلی مرتبہ 1999ءمیں ایک دوسرے سے ملے۔ اس وقت پدمالکشمی 28 سالہ کنواری لڑکی تھی جبکہ سلمان رشوی 51 سال کا تھا اور 2 شادیاں کر چکا تھا۔ دونوں سال 2004ءمیں شادی کے بندھن میں بندھے اور پھر 3 سال بعد علیحدگی ہو گئی۔

You cannot copy content of this page