اس آدمی نے کیا شرمناک ترین کام کیا کہ عرب اسلامی ملک میں اسے چوک کے بیچ سرعام سزائے موت دے دی گئی؟ جان کر آپ بھی کانپ اٹھیں گے


یمن میں 3سالہ لڑکی کو زیادتی کا نشانہ بنانے کے بعد قتل کردینے والے مجرم کو گزشتہ روز سرعام سزائے موت دے دی گئی۔ انڈیاٹائمز کی رپورٹ کے مطابق 41سالہ محمد المغربی نامی شخص کو اس گھناﺅنے جرم پر عدالت کی طرف سے کھلے عام موت دینے کی سزا سنائی تھی جس پر سکیورٹی فورسز اسے دارالحکومت صنعاءکے تحریر سکوائر لے گئیں جہاں اسے موت کے گھاٹ اتار دیا گیا۔

رپورٹ کے مطابق مجرم کو پولیس کی 6گاڑیاں کڑے پہرے میں تحریر سکوائر تک لے کر گئیں کیونکہ خدشہ تھا کہ مقتول بچی کے قبیلے کے افراد حملہ کرکے اسے قتل کر دیں گے۔ سکوائر پر سینکڑوں لوگوں نے اس کی موت کا منظر دیکھا۔ اسے سزائے موت ملنے کے بعد بچی کے والد یحییٰ المطری کا کہنا تھا کہ ”مجھے ایسے لگ رہا ہے جیسے میں دوبارہ پیدا ہوا ہوں اور آج میری زندگی کا پہلا دن ہے۔آج مجھے سکون مل گیا ہے۔“

You cannot copy content of this page