جیالے آخر کب سمجھیں گے ؟


گزشتہ دنوں پاکستان کے شہر لاہور کے پریس کلب کے سامنے ایک شخص کی ویڈیو بڑی تیزی کے ساتھ سوشل میڈیا پر وائرل ہوئی جس میں اس نے نواز شریف کی تصویر اٹھائی تھی اور وہ نعرے لگا رہا تھا اور اس کے ساتھ اس کے ہاتھ میں ایک چھری تھی جس کی مدد سے وہ خود کو زخمی کر رھا تھا اور بار بار اپنے سینے پر وار کر رہا تھا اس کی وجہ سے اس کو کافی زخم بھی لگے اور اس کے کپڑے خون سے بھر گئے
اس کا کہنا تھا کہ میاں نواز شریف صاحب کو اس وقت دل کی شدید تکلیف کا سامنا ہے اور وہ بیمار ہے لیکن موجودہ حکومت کے لوگ نہ صرف ان کے اوپر ظلم و زیادتی کر رہے ہیں

بلکہ ڈاکٹر تک ان کو رسائی نہیں دے رہے ہیں ان کا یہ کہنا تھا کہ میں خود کو اس وقت تک یہاں سے نہیں ہٹاؤں گا اور نہ ہی علاج کی غرض سے جاؤں گا جب تک میاں نواز شریف صاحب کو ڈاکٹر کی سہولت میسر نہیں ہوگی بعدازاں اس شخص کو پولیس کی مدد سے وہاں سے ہٹایا گیا اور اس کو طبی امداد دی گئی مزید تفصیلات کے لیے ویڈیو ملاحظہ فرمائیے