عامر لیاقت نے اپنے شو میں آسیہ کے لئے کیا کہا


عامر لیاقت نے اپنے شو کے دوران کہا ہے کہ یہ ممکن ہی نہیں کہ اپ ﷺکی عز ت کے بغیر ہم عزت پائے اور ہم تو آپ کے نم سے عزت پاتے ہیں آپ کا نام ہو گا تو ہماری عزت ہے اور اگر آپ کا نام نہیں تو ہماری کوئی عزت نہیں اور جو آپ کی نام کی توقیر نہیں کرے گا اور آپ کے نام کا لاج نہیں رکھے گا تو وہ ہمارے لئے قابل قبول نہیں اور اس کا ایک ہی فیصلہ ہے جو پاکستان کے آئین میں 292cمیں واضح طور پر درج ہیں لیکن سوال یہ ہے کہ ایساعمل کوئی کرے تو فیصلہ ہو کوئی اس حدود سے باہر نکلے تو فیصلہ ہو اور کوئی آپ ﷺکے شان اقدس میں جرات ذلیلہ کرتا ہے تو اس کے خلاف یہ فیصلہ ہو اور اس کے ہاتھ اور سر کاٹنے کے لئے اس شاخ کے ہاتھ موجود ہیں

اور وہ شاخ میں اور آپ نہیں بلکہ حکومت پاکستان اور افواج پاکستان ہیں یہ کیسے ہوسکتا اہے کہ 6002 میں وہ بندہ استعفیٰدے دیتا ہے اور یہ کہتا ہے کہ سلمان رشدی کو سر کا ٹائیٹل کیوں ملا ہے اوراور وہ شخص جس نے ناموس عسالتﷺکو دیکھ کر اپنے جذبات پر قابو نہ پاسکا۔۔۔۔۔۔باقی تفصیلات کے لئے ویڈیو دیکھیں ۔۔۔اگر آپ کو ہماری پوسٹ اچھی لگے تو کمینٹ میں اپنی رائیں ضرور دیں اور اس پوسٹ کو اپنے دوستوں کے ساتھ شئیر کرنامت بھولئے گا

https://www.youtube.com/watch?v=RNOq18ivKow
You cannot copy content of this page