عمران خان یہ موجودہ نظام بدل رہا ہے


یہ نظام مکمل طور پر جا رہا ہے اور اس گٹھیا ترین نظام کومکمل طور پر کفن پہنانے کا وقت ہوا چلا جارہا ہے کیا ہم اس نظام کے طور پر دنیا میں چلیں گے کیا اس شرک والے نظام سے دنیا میں پاکستان کے فیصلے ہونے ہیں کہ اس کے ہاں میں ہاں اور اس کے نا میں نا دنیا والے ملائیں گے سوال ہی پیدانہیں ہوتا علامہ اقبال نے فرمایا تھا کہ ہم نے پہنائی ہے خود شاہی کو جمہوری کا لباس ذرا آدم ہوا ہے خود شناس وخود نگر ۔اور یہ ابلیس کا نظام ہے اور اگر ہم اللہ کا شکر اداکریں کیونکہ اللہ نے ہمیں سبب کے طور پر پاکستان آئی ایس آئی اور فوج دی ہے جو ہمارے اس ملک خداد کی حفاظت پر مامورہیںاور یہ اس ملک کی حفاظت کر رہے ہیں

اور وہ نظام جس کی وجہ سے اللہ کی رحمتیں اس ملک پر اس نظام کی وجہ سے رک رہی تھی تو آج اللہ کے فضل سے اللہ نے عمران خان کی صورت میں ہمیں اس ملک کے وہ ابلیس والانظام کو ختم کرنا اور اس کے بدلہ میں اللہ کا نعمت اور رحمتیں اللہ نے ہمیں عطاء کی ہیں اور جب یہ نظام ختم ہونے جارہاہےجب ہم کہتے ہیں اللہ اکبر تو ہم کہتے ہیں اللہ سب سے بڑا ہے تو کیا ہمارے پارلیمنٹ میں یہ قانون نافذ ہے تو اس سے شرک اور کیا ہو سکتی ہے کہ جو ملک الللہ کے نام پر بنا ہو اور اس میں اللہ کا قانون نافذ نہ ہو ۔۔۔۔۔باقی تفصیلات کے لئے ویڈیو دیکھیں۔۔۔۔اگر آپ کو ہماری پوسٹ اچھی لگے تو کمینٹ میں اپنی رائے ضروردیں اور اس پوسٹ کو اپنے دوستوں کے ساتھ شیئر کرنا مت بھولئےگا

You cannot copy content of this page