سابق رکن قومی اسمبلی نوجوان لڑکی سے زبردستی شادی پر گرفتار


سابق رکن قومی اسمبلی فیض ٹًمن نوجوان لڑکی سے مبینہ طور پر جائیداد ہتھیانے کی خاطر زبردستی شادی کرنے اور حبس بیجا میں رکھنے پر گرفتار ۔نجی ٹی وی کے مطابق فیض ٹمن کے خلاف عائشہ سرفراز نامی خاتون نے تھانہ روات میں درخواست دی تھی کہ فیض ٹمن نے اس کی بہن ایمان ملک کو بہلا پھسلا کر نشہ آور ادویات پلا کر جائیداد ہتھیانے کی خاطر شادی کر لی اور بعد ازاں اس پر تشدد کیا۔روات پولیس نے فیض ٹمن اور ان کے ساتھیوں کے خلافحبس بیجا اور دھمکیوں سمیت متعدد دفعات کے تحت

مقدمہدرج کر کے تفتیش کا آغاز کیا۔ایس پی صدر افتخار الحق نے سابق رکن قومی اسمبلی کی گرفتاری کی تصدیق کرتے ہوئے بتایا کہ ملزم کے دیگر ساتھیوں کی گرفتاری کے لیے بھی چھاپے مارے جا رہے ہیں۔دوسری طرف فیض ٹمن نے ایس ایچ او روات پر عدم اعتماد کا اظہار کرتے ہوئے سی پی او کو درخواست دی تھی کہ کسی دوسرے افسر سے غیر جانبدار تفتیش کرائی جائے جس کے بعد ڈی ایس پی صدر نے کیس کی تفتیش شروع کی تھی۔

 

You cannot copy content of this page