گلالئی پر بدترین وحشیانہ تشدد


خو اجہ سراءدنیا کے ہر ملک میں پائے جاتے ہیں اور ہمیشہ سے ہی معاشرے کا حصہ رہے ہیں لیکن اس کے باوجود یہ ناصرف اپنے حقوق حاصل کرنے میں ناکام ہیں بلکہ انہیں بے دردی کے ساتھ تشدد کا نشانہ بنایا جاتا ہے اور بعض اوقات تو جان سے ہی مار دیا جاتا ہے.حال ہی میں پاکستان کی ایک اور خواجہ سراءکے ساتھ افسوسناک اور دل گرفتہ واقعہ پیش آیا جسے تشدد کا نشانہ بناتے ہوئے لہو لہان کر دیا گیاگلا لئی نے ایک ہفتے قبل گلبرگ پولیس سٹیشن میں شکایت درج کرانے کی کوشش کی کہ اس کی جان کو خطرہ ہے لیکنکسی نے بھی اس کی فون کال کا جواب نہ دیا اور اب اسے شدید تشدد کا شکار ہونا پڑا ہےہماری خواجہ سراءبہن گلالئی پر تشدد ناقابل قبول ہے. آشناؤں کی جانب سے خواجہ سراؤں کو تشدد بنانے والے واقعات میں ہوشربا اضافہ ہو گیا ہےگلالئی نے ایک ہفتہ پہلے پولیس کو اپنی جان کو خطرے سے متعلق بتایا مگر کسی نے کوئی پرواہ نہ کی اور نتیجہ یہ نکلا ہے، کیا وہ اسی کی حقدار ہے

You cannot copy content of this page