ساہیوال: لڑکی کو ونی کرنے پر پنچائت کے سربراہ سمیت 11 افراد گرفتار


ساہیوال(ویب ڈیسک) نواحی چک 114/7-Rمیں ایک لڑکی کو ونی کرنے پر پنچائیت کے سربراہ ، نکاح خواں اور گواہوں سمیت گیارہ افراد کو پولیس نے گرفتار کر لیا۔ واقعات کے مطابق چک نواب کے کاٹھیا کے منیر احمد کا باپ عبداللہ اور اس کے ساتھی چک 114/7-Rمیں آئے‘ خضر عباس کے والد علی شیر اور ماں میراج بی بی کو ڈرا دھمکاکر کہا کہ اس کے بیٹے رفیق نے منیر احمد کی بیوی نواب بی بی زبردستی سے زنا کیا‘

پنچائیت کے بہانے ملزموں نے اس کی بیٹی خضراں بی بی 14سا لہ اور اس کے ماں باپ کو ہمراہ ایک گاڑی میں بٹھا لیا‘ پنچائیت کے سربراہ محمد شیر کے ڈیرہ پر لے گئے۔ پنچائیت کا فیصلہ کرتے ہوئے پنچائیت نے زبر دستی خضرا ں کا نکاح منیر احمد سے کر دیا، نکاح خاں مولوی ظفر اقبال ، فلک شیر ، شاہد گواہوںاور اس کے ساتھیوں طارق اور شاہد نے گواہی دی۔ حق نواز، بشیراں اور لڑکی کے باپ علی شیر اور لڑکی کی ماں میراج بی بی کو بٹھا کی نکاح کیا۔ جس پر لڑکی کے بھائی خضر عباس نے پولیس کو اطلاع دی۔ ڈی ایس پی امجد جاوید کمبونے واقعہ کا فوری نوٹس لیا۔ پولیس نے لڑکی کو ونی کرتے ہوئے چھاپہ مار کر گیارہ ملزموں کو گرفتار کرنے کے بعد ان کے خلاف 366-A,310-A,365-Bت پ مقدمہ درج کرکے تفتیش شروع کر دی ہے۔

You cannot copy content of this page