سمسن کارٹون کی اب تک کی سب سے خوفناک پیشن گوئی


سمسن کے بارے میں تو سب ہی جانتے ہوں گے یہ کیسا کارٹون ہے کہ جس کے اندر کچھ ایسی پیشن گوئی کی گئی تھی جو کہ حیران کن حد تک مکمل ہو چکی ہے اس کے اندر ایمان کی جھلک دکھائی گئی تھی اس کے اندر یہ دکھایا گیا تھا کہ مستقبل میں ڈونلڈٹرمپ صدر بنے گا اس میں یہ بھی دکھایا گیا تھا کہ سعودی عرب کے اندر ایک نیا شہر تعمیر ہوگا اور اس میں حال ہی میں ایک اور کلپ سامنے آرہا ہے جس میں دکھایا گیا ہے کہ اسسمسن نے باقاعدہ طور پر دجال ہونے کا دعویٰ کیا ہوتا ہے یہ کہانی دراصل کچھ ایسی ہی ہے کہ یہ شخص کارٹون کا کردار چھٹیاں منانے کے لئے اسرائیل کا رخ کرتا ہے لوگوں کی حد سے زیادہ مذہب کے ساتھ لگاؤ اس کو ناپسند ہوتا ہے جس کے بعد وہ اس صحرا میں نکل جاتا ہے اور صحرا نوردی کرتے ہوئے گم ہو جاتا ہے اس کو پیاس لگنا شروع ہو جاتی ہے اور اس حالت میں اس کو بہترین قسم کا کھانا صحرا میں پڑھا ہوا مل جاتا ہے جس کو کھانے کے بعد اس کو یہ احساس ہوتا ہے کہ میں تو وہی شخص ہوں جس کا پورا زمانہ انتظار کررہا ہے یعنی کہ دجال جس کے بعد یہ کردار یہودی ٹوپی سر پر رکھ کر یورشلم جاتا ہے اور بیت المقدس میں موجود ایک پتھر جس کو راک آف ڈوم کہا جاتا ہے وہاں چلا جاتا ہے اور وہاں کھڑے ہو کر لوگوں میں اعلان کرتا ہے کہ میں تمہارا نجات دھندہ ہو یہودی اس کے پیچھے لگ جاتے ہیں اور پوری دنیا پر قبضہ کر لیتے ہیں


ایسے ہی ایک اور پیشن گوئی اس میں شام کے حالات کے بارے میں کی گئی تھی کہ شام کے حالات خراب ہو جائیں گے یہ کارٹون 2001 میں کہیں بنا تھا اور اس کے کچھ سال بعد شام کے اندر خانہ جنگی شروع ہوئی ایسی ہی ان کی کوشش ہے کہ دنیا پر اپنا کنٹرول برقرار رکھنے کے لئے مختلف طرح کے ہتھیار اور آلات کا استعمال کیا جائے اور لوگ کی ذہن سازی کی جائے تا کہ وہ ذہنی طور پر تیار ہو سکے کہ دجال ان کے لئے ایک رہنما ہے اور ان کا نجات دہندہ ہیں

You cannot copy content of this page