قربت کے لمحات میں خاتون کے منہ سے ایک لفظ ایسا نکل گیا کہ غصے میں آکر آدمی نے جان سے ہی مار ڈالا


امریکا میں ایک بے رحم شخص نے قربت کے لمحات کے دوران ایک سفاک درندے کا روپ دھار لیا اور اپنی محبوبہ کے جسم کو ایسی وحشت سے نوچا کہ پیٹ پھاڑ کر انتڑیاں باہر نکال دیں، جس کے نتیجے میں بیچاری لڑکی تڑپ تڑپ کر ہلاک ہو گئی۔
ٹائمز آف انڈیا کی رپورٹ کے مطابق 26سالہ فدیل لوپز کی کچھ عرصہ قبل ہی ماریہ نیمت نامی لڑکی کے ساتھ دوستی ہوئی تھی۔ وہ دونوں چند ماہ سے اکٹھے رہ رہے تھے اور بظاہر ان کا تعلق بہت اچھا اور دوستانہ تھا۔ درندہ صفت شخص نے نے اپنے بھیانک جرم کے بارے میں پولیس کو دئیے گئے اعترافی بیان میں بتایا کہ ”ازدواجی فرائض کی ادائیگی کے دوران ماریہ نے بے خودی کے عالم میں اپنے سابقہ خاوند کا نام لیا تو میرے دماغ پر خون سوارہوگیا۔ میں نے اس پر حملہ کردیا اور اس کا پیٹ پھاڑ کر انتڑیاں باہر نکال دیں۔ وہ میرے سامنے تڑپ تڑپ کر موت کے منہ میں چلی گئی۔ کاش میں ایسا نہ کرتا۔ میں اپنے ہوش و حواس میں نہیں تھا۔ کاش میں یہ ظلم نہ کرتا۔“

تفتیش کے دوران معلوم ہوا ہے کہ وقوعہ سے قبل فدیل لوپز نے کافی زیادہ شراب پی تھی۔ غالباً اس نے نشے کی زیادتی کے باعث غیر معمولی سفاکیت کا مظاہر کیا۔ ملزم کے خلاف ٹھوس شواہد کی موجودگی میں مقدمہ چلایا گیا اور عدالت نے اسے عمر قید کی سزا سنادی ہے۔

You cannot copy content of this page